خاوند نے بیوی قتل کردی۔لواحقین کا نعش تھانہ کینٹ کے سامنے رکھ کر احتجاجی مظاہرہ

نگری بالا کی رہائشی تین بچوں کی ماں کو گھریلو تنازعہ پر خاوند نے اسلام آباد لے جاکر گلے میں پھندا ڈال کر قتل کردیا۔مقتولہ خاتون نے چند روز قبل ڈی پی اوکو خاوند سے تحفظ فراہم کرنے کی درخواست دی تھی۔پولیس کی جانب سے نوٹس نہ لینے پر مقتولہ کے لواحقین کا نعش تھانہ کینٹ کے سامنے رکھ کر احتجاجی مظاہرہ۔پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی۔مظاہرین اورپولیس کے مابین رات گئے تک مزاکرات جاری رہے۔نگری بالا کی رہائشی مقتولہ سعدیہ بی بی نے چند روز قبل ڈی پی او ایبٹ آباد کو درخواست دی تھی کہ اسے اس کے خاوند سے جان کا خطرہ ہے۔اس کا خاوند اسے کسی بھی وقت قتل کرسکتا ہے۔ڈی پی او نے درخواست ڈی ایس پی تھانہ کینٹ قمر حیات کو مارک کی تاہم کینٹ پولیس کی جانب سے معاملہ کا نوٹس نہیں لیا گیا۔ہفتہ کی صبح سعدیہ بی بی کا خاوند سفیر اسے اسلام آباد لے گیا اورگلے میں پھندا ڈال کر قتل کیا۔اطلاع پر مقتولہ کے لواحقین اسلام آباد گئے اورہفتہ کی شام مقتولہ کی نعش لے کر ایبٹ آباد پہنچے۔مقتولہ کے لواحقین نے نعش تھانہ کینٹ کے سامنے رکھ کر احتجاجی مظاہرہ کیااورپولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ڈی ایس پی کینٹ قمر حیات چھٹی پر تھے جس پر ڈی ایس پی میرپور طاہر اقبال تھانہ کینٹ پہنچ آئے اورمظاہرین کو تھانہ لے گئے جہاں رات گئے تک پولیس اورمظاہرین میں مزاکرات جاری رہے۔